Fatwa Online

کیا پہلی طلاق کے بعد رجوع کے لیے حلالہ ضروری ہوتا ہے؟

سوال نمبر:1302

پہلی طلاق کے بعد میاں‌ بیوی آپس میں‌ حلالہ کیسے کر سکتے ہیں؟

سوال پوچھنے والے کا نام: ذوالقرنین حیدر

  • مقام: فیصل آباد، پاکستان
  • تاریخ اشاعت: 23 دسمبر 2011ء

موضوع:رجوع و تجدیدِ نکاح

جواب:

حلالہ پہلی طلاق پر نہیں بلکہ تین طلاقوں کے واقع ہونے کی صورت میں کروایا جاتا ہے۔ آپ کے مسئلہ میں حلالہ کی ضرورت نہیں ہے، چونکہ ایک طلاق دینے سے طلاق رجعی واقع ہوتی ہے، اس لیے عدت کے اندر رجوع کر لے، اگر عدت گزر گئی ہے تو تجدید نکاح کر لے، یہاں حلالہ کی ضرورت نہیں۔ اب آپ کے پاس دو طلاقیں باقی رہ گئی ہیں۔ اگر کبھی دو طلاقیں آپ نے دے دی تو طلاق مغلظہ واقع ہو جائے گی۔ پھر حلالہ کے بغیر یہ بیوی آپ کے لیے جائز نہیں ہوگی۔

واللہ و رسولہ اعلم بالصواب۔

مفتی:عبدالقیوم ہزاروی

Print Date : 08 August, 2020 01:55:06 AM

Taken From : https://www.thefatwa.com/urdu/questionID/1302/